Aap ka Apna Urdu Forum !!! AchiDosti.comAap ka Apna Urdu Forum !!! AchiDosti.com
  Aap ka Apna Urdu Forum !!! AchiDosti.com
Register Achi Dosti VideosInvite Your Friends FAQ Calendar Search Today's Posts Mark Forums Read


Home Today's Posts
Go Back   Aap ka Apna Urdu Forum !!! AchiDosti.com > Welcome To Achi Dosti > Competitions/Polls Forum

Competitions/Polls Forum All Competitions And Pollings Related ToFun AchiDosti Goes To This Section


View Poll Results: Polling
Sharing # 1 0 0%
Sharing # 2 1 16.67%
Sharing # 3 3 50.00%
Sharing # 4 2 33.33%
Voters: 6. You may not vote on this poll

User Tag List
Abeer , chashmish, ROHAAN FAISAL

Closed Thread
 
Thread Tools Display Modes
  #1  
Old 04-23-2016, 09:53 AM
Assassin's Avatar
Assassin Assassin is offline
Co Admin
Points: 566,130, Level: 100
Points: 566,130, Level: 100 Points: 566,130, Level: 100 Points: 566,130, Level: 100
Level up: 0%, 0 Points needed
Level up: 0% Level up: 0% Level up: 0%
Activity: 100%
Activity: 100% Activity: 100% Activity: 100%
Parents: Your room is a
mess... Me: You should see my
life.
 
I am: Asleep
 
Join Date: Jun 2011
Location: Banjaara :P
Posts: 23,903
Thanks: 3,294
Thanked 5,632 Times in 1,096 Posts
Mentioned: 1473 Post(s)
Tagged: 4508 Thread(s)
Rep Power: 564
Assassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant future
Assassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant future

Awards Showcase
award Monthly Competitions Award Winner of Picture Gallery Best CoAdmin 
Total Awards: 14

Default Polling For Urdu Adab Competition April 2016

السلام علیکم

امید ہے سب ٹھیک ہوں گے
اردو ادب کے مقابلے میں آپ نے "روزن دیوار سے" از عطا ءالحق قاسمی

سے اقتباس شئیر کرنا تھا۔
شئیرنگز کچھ یوں ہیں۔

1

مہا بھارت کے یُدھ (لڑائی) کیلئے جب ارجن تیار ہو گیا تو اس نے کرشن جی سے پوچھا ”مہاراج! میرے شترو (دشمن) کون ہیں؟“ کرشن جی نے کہا ”ارجن! کیا تو اپنے شترو بھی نہیں پہچانتا؟“ ارجن بولا ”مہاراج ! میں بھیتر (اندر) کے شترو کاپوچھ رہا ہوں“ کرشن جی نے کہا ”ارجن! تیرے بھیتر کے شترو تین ہیں جو ہر مُنش (انسان) کیساتھ ہوتے ہیں جو کوئی ان پر قابو پائے بنا آگے بڑھتا ہے وہ وِناش (تباہی) کے راستے پر چلتا ہے اور اسے وِناش ہی ملتی ہے اور جو اپنے بھیتر کے شترو پر قابو پالیتا ہے وہ ہمیشہ فتح پاتا ہے، کامیابی حاصل کرتاہے۔


ارجن! تیرے بھیتر کے شترو تین ہیں۔ تیرا سب سے بڑا شترو کرود (غصہ) ہے، دوسرا شترو آہنکار (تکبر) ہے اور تیسرا شترو بدلے کی بھاونا (انتقام کی خواہش) ہے۔ ارجن! یاد رکھنا کوئی مُنش (انسان) اس وقت تک بڑا نہیں بنتاجب تک وہ اپنے بھیتر کے ان تینوں شتروں کوختم نہیں کرتا۔ کسی بھی کامیابی کیلئے سب سے اہم کام اپنے بھیترکے شترو ختم کرکے آگے بڑھنا ہے!“ یہ خوبصورت حکایت الطاف گوندل نے مجھے سنائی اورانہیں اپنے گھر کے دروازے پر رخصت کرنے کے بعد بھی میں بہت دیر تک اس حکایت کے سحر میں گم رہا۔ دانائی کسی ایک قوم، قبیلے یا مذہب تک محدود نہیں بلکہ یہ آپ کو ہر جگہ سے مل سکتی ہے۔ حدیث ِ قدسی ہے کہ علم مومن کی میراث ہے۔ یہ جہاں سے بھی ملے اسے حاصل کرنا چاہئے۔


انسانوں اور حکمرانوں کے اندرونی دشمن!,,,,روزن دیوار سے … عطاء الحق قاسمی


2

میں حقیقتاً ایک گنہگار آدمی ہوں بلکہ اس کا تعلق ایک عام آدمی کی ان پریشانیوں سے ہے جو ٹوٹ پھوٹ کا شکارموجودہ نظام کی دین ہیں۔ ہمیں جب اپنے مسائل کا حل ریاست کی طرف سے نہیں ملتا تو ہم غیبی مدد کا انتظار کرنے لگتے ہیں اور اس میں بھی ہمیں کھرے کھوٹے کی پہچان نہیں رہتی کیونکہ غرض مند دیوانہ ہوتا ہے، تاہم اس سے قطع نظر، سچی بات یہ ہے کہ یہ فلو مجھے مزا بہت دے رہا ہے اور روزمرہ زندگی سے ہٹ کر ایک ایسی زندگی بسر کر رہا ہوں جس میں رومانویت کی جھلک پائی جاتی ہے جب چھینکیں آتی ہیں، نزلہ بہتا ہے تو کچھ دیر کے لئے دماغ اتنا ہلکا پھلکا ہو جاتا ہے کہ ہوا میں اڑنے کو جی چاہنے لگتا ہے جب میں فلو کی شدت میں آنکھیں بند کر کے بیٹھا ہوتا ہوں تو مجھے غالب کے اس شعر؛

جی چاہتا ہے پھر وہی فرصت کے رات دن
بیٹھے رہیں تصور جاناں کئے ہوئے

کی عملی تفسیر نظر آنے لگتی ہے یہ کرنا ہے، وہ کرنا ہے، یہاں جانا ہے، وہاں جانا ہے، یہ لکھنا ہے، وہ لکھنا ہے۔ ان سب چیزوں سے جان چھوٹ جاتی ہے اور پھر یہ بیماری ایسی بھی نہیں کہ انسان درد سے چیخنا چلانا شروع کر دے یا یہ جان لیوا ثابت ہو بلکہ ایک نہایت شریف النفس اور امن پسند بیماری ہے۔ یہ چاہتی ہے کہ آپ صرف آرام کریں، دنیای داری سے تھوڑا سا ہاتھ کھینچیں، لڑائی جھگڑا نہ کریں، فضول سرگرمیوں میں وقت ضائع نہ کریں۔ یہ بیماری روزمرہ کے معمولات جو زندگی کو بور بنا دیتے ہیں اس میں ایک مختلف رنگ کا اضافہ کرتی ہے تاہم میری دعا ہے کہ یہ بیماری آئندہ پانچ سات سال میں صرف ایک آدھ بار میرا رخ کرے تو بہتر ہے کیونکہ;
قدر کھو دیتا ہے ہر روز کا آنا جانا

عطاء الحق قاسمی کے کالم "روزن دیوار" سے اقتباس



3

میں نے ملک صاحب سے کہا”ملک صاحب!آج کل لوڈ شیڈنگ سے عوام بہت پریشان ہیں ، ایک گھنٹے کے لئے بجلی آتی ہے اور پھر کئی گھنٹوں کے لئے چلی جاتی ہے، عوام اس صورتحال کی وجہ سے ذہنی امراض میں مبتلا ہورہے ہیں“۔ اس پر ملک صاحب نے قہقہہ لگایا اور بولے”پتہ نہیں تم کن عوام کی بات کررہے ہو، میں تو بالکل نارمل ہوں، کیا تمہیں میرے چہرے پر کوئی پریشانی نظر آرہی ہے؟“۔میں نے جواب دیا ”نہیں“، کیونکہ آپ کے پاس 32کے وی کا جنریٹر ہے جس سے کئی گھر روشن کئے جاسکتے ہیں“۔ ملک صاحب کے چہرے پر مسکراہٹ ابھری ، انہوں نے مجھے مخاطب کیا اور کہا ”یہ کوئی دلیل نہیں، میں اگر پریشان ہونا چاہوں تو مجھے کون روک سکتا ہے؟دراصل تم لوگ پریشانیوں سے محبت کرنے لگ گئے ہو“۔ میں نے عرض کی ”ملک صاحب!اتنی سنگدلی کا مظاہرہ نہ کریں لوگ مسائل کے ہاتھوں عاجز آئے ہوئے ہیں، مہنگائی نے ان کا جینا دوبھر کیا ہوا ہے“۔ ملک صاحب نے یہ سن کر ایک بار پھر قہقہہ لگایا اور بولے”کون سی مہنگائی؟میں کل بازار گیا تھا اور قیمتیں سن کر حیران رہ گیا اس قدر کم قیمتیں؟یقین کرو اٹلی کا بنا ہوا سوٹ صرف ڈیڑھ لاکھ میں مل رہا تھا“۔اس وقت میری دسترس میں کوئی اینٹ نہیں تھی جس سے میں اپنا یا ملک صاحب کا سر پھوڑ سکتا، چنانچہ میں نے صبر کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہا ”ملک صاحب!آپ اپنی بات نہ کریں، آپ امیر آدمی ہیں، میں غریب لوگوں کی بات کررہا ہوں،جن کے لئے دو وقت کی روٹی بھی مشکل ہورہی ہے“۔یہ سن کر ملک صاحب نے رونی آواز میں کہا”کیوں میری غربت کا مذاق اڑاتے ہو، میں ستر کروڑ روپے کا مقروض ہوں“۔ میں نے عرض کی ”اخبار میں خبر شائع ہوئی تھی کہ آپ کے یہ ستر کروڑ روپے حکومت نے معاف کردئیے ہیں“۔اس پرملک صاحب نے میری بے خبری پر سر پیٹ لیا اور بولے”یہ ستر کروڑ ابھی معاف نہیں ہوئے ، وہ پچاس کروڑ معاف ہوئے ہیں جس کی خبر تم نے پڑھی ہوگی“۔
مجھے ملک صاحب کی ”غربت“پر ترس آنے لگا تھا تاہم میں نے اس ”مقروض“ شخص سے کہا”وہ تو ٹھیک ہے لیکن پھر بھی آپ ان لوگوں کا سوچیں جو اس شدید سردی میں گیس کا ہیٹر بھی نہیں جلا سکتے کہ گیس کی لوڈ شیڈنگ بھی زوروں پر ہے“۔ ملک صاحب بولے”پتہ نہیں یار! تم کس دنیا میں رہتے ہو، میں بھی تو انسان ہوں، میں بھی تو اس سردی میں آخر جی ہی رہا ہوں بلکہ میں تو رات کو صرف بنیان اور انڈر ویئر میں سوتا ہوں“۔ میں نے کہا”ملک صاحب !لگتا ہے شدید غربت اور کروڑوں روپوں کے مقروض ہونے کی وجہ سے آپ کی یادداشت متاثر ہوئی ہے، کیونکہ آپ بھول رہے ہیں آپ کا گھر سینٹرلی ہیٹڈ ہے“۔ ملک صاحب کو میری یہ بات اچھی نہیں لگی ، چنانچہ غیظ و غضب کے عالم میں بولے”تم لوگوں میں اتنا حسد کیوں ہے؟ اور تم لوگ یہ کیوں نہیں سوچتے کہ انسان اگر گزارہ کرنا چاہے تو ہر طرح کے حالات میں کرسکتا ہے،آخر انسان کبھی غاروں میں بھی تو رہا کرتا تھا۔ وہاں کون سی بجلی ہوتی تھی، وہاں کون سی گیس تھی، یہ جو تم دو وقت کی روٹی کی بات کرتے ہو، وہاں کون دو وقت کی روٹی کھاتا تھا، لوگ گھاس پھونس کھالیتے تھے، اگر کسی کا نشانہ اچھا ہے تو وہ کوئی جانور شکار کرلیتا تھا، باقی لوگ بیٹھے اس کا منہ دیکھتے رہتے تھے“۔
ملک صاحب کا یہ لیکچر میرے لئے خاصا چشم کشا تھا، ان کے اندر کا وہی غاروں میں رہنے والا انسان باہر آگیا تھا جو Survival of the fittestپر یقین رکھتا تھا، مجھے لگا جیسے آج بھی ایک عام آدمی غاروں میں رہنے والے انسان کی زندگی بسر کررہا ہے ، چنانچہ بجلی پانی اور مناسب خوراک سے اس طرح محروم ہے جس طرح اس کے ”آباو اجداد“ محروم تھے، ان لمحوں میں مجھے یہ بھی محسوس ہوا کہ ملک صاحب اور ان ایسے دوسرے دس بیس لوگ تیر کمان کا ندھوں سے لٹکائے اپنے ٹھکانوں سے باہر نکلتے ہیں، فرق صرف یہ ہے کہ ا ب وہ جانوروں کی بجائے انسانوں کا شکار کرتے نظرآتے ہیں۔ اقتداران کے پاس ہے،سیاست ان کے گھر کی لونڈی ہے، عدالتیں ان کی ہیں ، قانون ان کا ہے، معیشت ان کے اشاروں پرچلتی ہے، وسائل ان کے پاس ہیں، محلات میں رہنے والی یہ مخلوق عوام نالی کی مخلوق سے متعارف نہیں ہے۔ عوام کے مسائل انہیں خود ساختہ لگتے ہیں، یہ”ڈان“ہیں اور لوگ ان کے خوف سے گھروں میں سہمے بیٹھے ہیں۔ اہل قلم ان سہمے ہوئے لوگوں کے دکھ درد بیان کرتے ہیں، مگر ان کا خوف دور نہیں کرتے ۔میں نے سوچا اہل قلم بھی تو انہی خوفزہ لوگوں کے طبقے سے تعلق رکھتے ہیں اور ایک خوفزہ شخص کسی دوسرے خوفزہ شخص کا خوف کیسے دور کرسکتا ہے؟

خوف زدہ لوگوں کے درمیان!,,,,روزن دیوار سے … عطاء الحق قاسمی


4

یہ منظر میں نے سرگودھا میں پنجاب کالج کے کل پاکستان مزاحیہ مشاعرے میں دیکھا۔ ایک نوجوان ”مولوی“ سٹیج پر آیا۔ پنڈال میں تین ہزار طلبہ کا اجتماع تھا۔ آنکھوں میں ڈورے والا سرمہ اور ٹخنوں سے اونچی شلوارپہنے اس ”مولوی“ نے پہلاشعر ترنم سے پڑھا تو مجمع قہقہوں سے گونج اٹھا۔ پھر دوسرا، پھر تیسرا! اورہر بار مجمع اسی طرح قہقہے لگاتا تھا کہ کان پڑی آواز سنائی نہیں دیتی تھی۔ یہ ”مولوی“ درمیان میں کسی گانے کا ”ٹوٹا“ بھی چلا دیتا تھا اور شعروں کے درمیان یہ ”ٹوٹا“ اتنا فٹ بیٹھتا تھا کہ قہقہوں کی برسات کے ساتھ بے ساختہ داد و تحسین کا شور بھی اٹھتا تھا۔ اس ”مولوی“ کا نام سید سلمان گیلانی تھا اور یہ اپنے وقت کے ایک نہایت خوبصورت انقلابی شعر کہنے والے سید امین گیلانی کا بیٹا تھا اسے ایک منفرد قسم کا ترنم ورثے میں ملا تھا لیکن حس مزاح اس کی اپنی تھی۔ میں نے سلمان گیلانی کو باربار”مولوی“ اس لئے لکھا کہ ان کی وضع قطع خالص ”مولویانہ“ سی ٹخنوں سے اونچی شلوار کے علاوہ چہرے پر داڑھی اور سر پر بندھا چوخانے کا رمال ان کے دینی رجحان کو ظاہر کرتا تھا، میں ان کی اس وضع قطع کو ”مومنانہ“ بھی قراردے سکتا تھا مگر ”مولویانہ“ اس لئے قرار دیاکہ لوگوں کے ذہنوں میں ”مولوی“ کے ساتھ کرختگی کاتصور آتا ہے، چنانچہ اس کرختگی کو ”سوفٹ امیج“ میں بدلنے کے لئے مجھے سید سلمان گیلانی کو ”مولوی“ قرار دینا پڑا ہے۔ مشاعرے کا دوسرا دور طالبات کے لئے تھاچنانچہ میں نے تجویز پیش کی کہ سلمان گیلانی اگرچہ سرفراز شاہد، انعام الحق جاوید، خالد مسعود اور عذیر احمد سے جونیئر ہیں لیکن انہیں سب سے آخر میں پڑھایا جائے کیونکہ ان کے عوامی انداز اور ترنم کے سامنے ان شعراء کا ”سادہ“ انداز نہیں ٹھہرسکتا تھا چنانچہ اس تجویز پر عمل ہوااور یوں مشاعرہ آہستہ آہستہ اپنے کلائمکس کی طرف گیا۔ مشاعرے کے پس پردہ ”ہدایتکار“ پروفیسر ارشدجبار پراچہ تھے جو وہیل چیئر پر ہونے کے باوجود ایک طویل عرصے سے ضلع سرگودھا کو ادبی طور پر پوری طرح فعال بنائے ہوئے ہیں۔ پنجاب کالج کے پرنسپل پروفیسر محمدعارف چودھری نے یہ محفل اس خیال سے آراستہ کی تھی کہ طلبا و طالبات کو ایک تعمیری تفریح میسر آسکے جس سے ہماری نوجوان نسل بہت حد تک محروم ہے اوریوں اس میں منفی رجحانات پرورش پا رہے ہیں۔ تقریب میں دیگر معززین کے علاوہ بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن سرگودھا کے چیئرمین پروفیسر عبدالعزیز بلوچ، کنٹرولر سہیل اظہر خان اور سیکرٹری پروفیسر انورفاروق نے بھی شرکت کی۔ باقی رہی اس مشاعرے میں میری شرکت تو سچی بات یہ ہے کہ یہاں میرا کوئی کام نہ تھا کیونکہ میں مزاحیہ شاعری نہیں کرتا چنانچہ مجھے صدرِ مشاعرہ بناد یا گیا۔ سو آپ یوں سمجھیں کہ میں اس مشاعرے کا چودھری فضل الٰہی (مرحوم) تھا۔
گزشتہ ہفتے ایک مشاعرہ چونڈہ میں بھی تھا۔آئی ایس پی آر کے کرنل عتیق اسلام آباد بیٹھ کر اس مشاعرے کی ”کمانڈ“ کررہے تھے۔ سیالکوٹ سے کیپٹن (ر) عطا محمد شاعروں کیساتھ رابطے میں تھے او رچونڈہ میں افتخار بھٹی اپنے مہمانوں کے لئے چشم براہ تھے لیکن لاہورسے چونڈہ جاتے ہوئے پہلے مریدکے میں ٹریفک جام ملااورتقریباً 45 منٹ انتظار کی یہ اذیت بھگتنا پڑی۔ اس کے بعدایمن آباد میں اس سے بدتر صورتحال پیش آئی۔ وہاں ایک خاتون اپنی یاکسی ڈرائیورکی غلطی سے جاں بحق ہوگئی تھیں اوراحتجاج کیلئے چالیس پچاس لوگوں نے سڑک بلا ک کر رکھی تھی اور گاڑیوں پر پتھراؤ کر رہے تھے۔ یہاں ٹریفک دو گھنٹے جام رہی جس کے نتیجے میں ہزاروں گاڑیوں کی قطار لگ گئی اوربیس بائیس ہزار لوگ چند افرادکے یرغمالی بن کررہ گئے۔ عذیر احمد اس سفرمیں بھی میرے ساتھ تھے۔میں نے اس روز انہیں پہلی دفعہ غصے میں دیکھا، ان کا خیال تھا کہ ہزاروں لوگوں کو یرغمالی بنانے والے چند افراد کو انہیں ”آہنی ہاتھوں“ سے نمٹنا چاہئے جس کی ”تڑی“ حکمران حضرات اکثردیتے رہتے ہیں۔ بہرحال ان تکلیف دہ لمحات کا نتیجہ یہ نکلا کہ چونڈے تک پہنچتے پہنچتے جسم تھکن سے چور ہوچکا تھا چنانچہ میں نے اور عذیر احمد نے جاتے ہی میزبانوں سے اس امر کی معذرت چاہی کہ ہم زیادہ دیر نہیں بیٹھ سکیں گے چنانچہ ہم دونوں نے اولین شعراء میں اپنا کلام سنایا اور واپس لاہور کی طرف روانہ ہوگئے۔
میرے آبائی ”گاؤں“ وزیر آباد کے نواحی قصبہ سوہدرے میں خوبصورت نوجوان شاعر شیراز ساگر کے شعری مجموعے کی تقریب ِرونمائی میں بھی میری شرکت ”ضروری“ تھی کہ یہ لوگ میرے ”گرائیں“ تھے۔ اس کااہتمام سوہدرہ پریس کلب کے صدر نجیب اللہ ملک اور جاوید بٹ نے کیا تھا۔ اس چھوٹے سے قصبے میں لوگوں کی ادب سے والہانہ وابستگی کا منظر اچھا لگا اوراس سے بھی اچھا یہ کہ یہاں میری ملاقات اپنے پرائمری کے سکول کے استاد ماسٹر اللہ دتہ کے صاحبزادے سے بھی ہوئی!
مولوی“ سلمان گیلانی سے ماسٹراللہ دتہ تک!....روزن دیوار سے …عطاء الحق قاسمی

اصول و ضوابط
آپ اپنے آپکو ووٹ نہیں کرسکتے
اور نہ ہی کسی ممبر کو کہیں گے کہ آُکو ووٹ کرے

پولنگ کی لاسٹ ڈیٹ 28 اپریل ہے
__________________
جلتے دئیوں میں جلتے گھروں جیسی ضو کہاں
سرکار روشنی کا مزا ہم سے پوچھئے
The Following 2 Users Say Thank You to Assassin For This Useful Post:
Haya Fatima (04-23-2016), Moona (04-23-2016)
  #2  
Old 04-23-2016, 11:22 AM
Haya Fatima's Avatar
Haya Fatima Haya Fatima is offline
ıllıllı sεαяcнιηg ıllıllı
Points: 67,219, Level: 100
Points: 67,219, Level: 100 Points: 67,219, Level: 100 Points: 67,219, Level: 100
Level up: 0%, 0 Points needed
Level up: 0% Level up: 0% Level up: 0%
Activity: 0%
Activity: 0% Activity: 0% Activity: 0%
★ iK TmaNna La'HasiL c ★
 
I am: Amused
 
Join Date: Feb 2013
Location: ıllıllı noт ғoυnd ıllıllı
Posts: 9,663
Thanks: 3,316
Thanked 1,350 Times in 244 Posts
Mentioned: 720 Post(s)
Tagged: 3133 Thread(s)
Rep Power: 272
Haya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant future
Haya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant futureHaya Fatima has a brilliant future

Awards Showcase
Monthly Competitions Award Monthly Competitions Award award award 
Total Awards: 18

Default

Done.....
__________________
CominG soOoOoOoOoN
  #3  
Old 04-23-2016, 06:35 PM
Moona's Avatar
Moona Moona is offline
VIP Member
Points: 31,701, Level: 100
Points: 31,701, Level: 100 Points: 31,701, Level: 100 Points: 31,701, Level: 100
Level up: 0%, 0 Points needed
Level up: 0% Level up: 0% Level up: 0%
Activity: 100%
Activity: 100% Activity: 100% Activity: 100%
Tang aamad Jang aamad
 
I am: Angelic
 
Join Date: Apr 2016
Posts: 13,345
Thanks: 6,144
Thanked 536 Times in 274 Posts
Mentioned: 2747 Post(s)
Tagged: 1976 Thread(s)
Rep Power: 286
Moona is on a distinguished roadMoona is on a distinguished roadMoona is on a distinguished roadMoona is on a distinguished roadMoona is on a distinguished road

Awards Showcase
Member of the Month Member of the Month Winner of Fashion Winner of Urdu Adab 
Total Awards: 4

Default

Voted...........
  #4  
Old 04-28-2016, 07:32 AM
intelligent086's Avatar
intelligent086 intelligent086 is online now
Co-Admin
Points: 693,710, Level: 100
Points: 693,710, Level: 100 Points: 693,710, Level: 100 Points: 693,710, Level: 100
Level up: 0%, 0 Points needed
Level up: 0% Level up: 0% Level up: 0%
Activity: 100%
Activity: 100% Activity: 100% Activity: 100%
This user has no status.
 
----
 
Join Date: Dec 2013
Location: لاہور، پاکستان
Posts: 56,148
Thanks: 4,141
Thanked 12,512 Times in 7,078 Posts
Mentioned: 3367 Post(s)
Tagged: 6345 Thread(s)
Rep Power: 1182
intelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud of
intelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud ofintelligent086 has much to be proud of

Awards Showcase
Winner Of IT Monthly Competitions Award Member of the Month(Male) Member of the Month(Male) 
Total Awards: 31

Default

وعلیکم السلام
اسی وی ووٹ پا دتا اے
اگوں اپنی اپنی قسمت
__________________
  #5  
Old 04-28-2016, 11:42 AM
Abeer's Avatar
Abeer Abeer is offline
Apni talash main gum...
Points: 582,434, Level: 100
Points: 582,434, Level: 100 Points: 582,434, Level: 100 Points: 582,434, Level: 100
Level up: 0%, 0 Points needed
Level up: 0% Level up: 0% Level up: 0%
Activity: 100%
Activity: 100% Activity: 100% Activity: 100%
You think you know people and
then they surprise you.
 
I am: Fine
 
Join Date: Aug 2012
Location: Dasht-e-Aarzu.....
Posts: 12,919
Thanks: 1,490
Thanked 6,437 Times in 1,700 Posts
Mentioned: 752 Post(s)
Tagged: 3382 Thread(s)
Rep Power: 326
Abeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud of
Abeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud ofAbeer has much to be proud of

Awards Showcase
Monthly Most Active Member Monthly Competitions Award Batooni Kuri Winner of Poetry Section 
Total Awards: 18

Default

@[Only Registered Users Can See LinksClick Here To Register]
Voting options nahi nazar aa rahe....how to vote?
__________________
  #6  
Old 04-28-2016, 01:11 PM
Assassin's Avatar
Assassin Assassin is offline
Co Admin
Points: 566,130, Level: 100
Points: 566,130, Level: 100 Points: 566,130, Level: 100 Points: 566,130, Level: 100
Level up: 0%, 0 Points needed
Level up: 0% Level up: 0% Level up: 0%
Activity: 100%
Activity: 100% Activity: 100% Activity: 100%
Parents: Your room is a
mess... Me: You should see my
life.
 
I am: Asleep
 
Join Date: Jun 2011
Location: Banjaara :P
Posts: 23,903
Thanks: 3,294
Thanked 5,632 Times in 1,096 Posts
Mentioned: 1473 Post(s)
Tagged: 4508 Thread(s)
Rep Power: 564
Assassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant future
Assassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant futureAssassin has a brilliant future

Awards Showcase
award Monthly Competitions Award Winner of Picture Gallery Best CoAdmin 
Total Awards: 14

Default

Quote:
Originally Posted by Abeer [Only Registered Users Can See LinksClick Here To Register]
@[Only Registered Users Can See LinksClick Here To Register]
Voting options nahi nazar aa rahe....how to vote?
Time khtm hogya hai isliye.... Thread close krna hai pc se a ke.

Sent from my LG-D801 using Tapatalk
__________________
جلتے دئیوں میں جلتے گھروں جیسی ضو کہاں
سرکار روشنی کا مزا ہم سے پوچھئے
Closed Thread

Bookmarks

Tags
2016, adab, april, competition, polling, urdu


Currently Active Users Viewing This Thread: 1 (0 members and 1 guests)
 
Thread Tools
Display Modes

Posting Rules
You may not post new threads
You may not post replies
You may not post attachments
You may not edit your posts

BB code is On
Smilies are On
[IMG] code is On
HTML code is Off

Forum Jump


All times are GMT. The time now is 04:07 AM.


Skin and Styling by [ Achi Dosti ] TheMask & Emaan
All Rights Reserved © www.achidosti.com
Aapka apna Urdu 

Forum

Disclaimer: All material on the forum (AchiDosti.Com) is provided for informative and/ or entertainment purposes only. None of the files shown here are actually hosted or transmitted by this server the links are provided solely by this site's users. All copyrighted material belongs to the copyright holders. If you find any of your copyrighted material on this site and you would like it to be removed, please Contact us and it will be removed promptly.